21

شبر زیدی نے وزیراعظم کو خط لکھ دیا

چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) شبر زیدی نے وزیراعظم عمران خان کو خط لکھ دیا۔

شبر زیدی نے خط میں کہا کہ ٹیکس کا موجودہ نظام ناقابل عمل اور ملکی معیشت کے لئے سنجیدہ خطرہ ہے۔

انہوں نےخط میں لکھا کہ پالیسیوں میں بہت سی خامیوں کے باعث کاروباری طبقہ ٹیکس نیٹ میں آنے سے گریزاں ہے۔

چیئرمین ایف بی آر کے مطابق پالیسی کی خامیوں کے باعث بہت سی دولت بغیر ٹیکس کے رہ جاتی ہے،اس لئے موجودہ ٹیکس نظام کو تبدیل کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا ٹیکس وصولیوں کا نظام جی ڈی پی کے 10 فیصد سے کم ٹیکس پیدا کرتا ہے، ملکی آبادی کے صرف ایک فیصد لوگ پورے ملک کا بوجھ اٹھائے ہوئے ہیں۔

چیئرمین ایف بی آر کے خط کے متن کے مطابق 300 کمپنیاں کل ٹیکس کا 85فیصد ادا کرتی ہیں،مینوفیکچرنگ شعبے سے کل ٹیکس کا 75فیصد حاصل ہوتا ہے،جس سے شعبے پر منفی اثر پڑتا ہے۔

انہوں نے خط میں لکھا کہ 31لاکھ بجلی کے کمرشل کنکشن ہیں، جن میں 90فیصد ٹیکس سسٹم کا حصہ نہیں،صنعتی شعبے میں بجلی کے کنکشن 3لاکھ 41 ہزار ہیں،جن میں سے 40ہزار سیلز ٹیکس رجسٹرڈ ہیں،ایک لاکھ کمپنیوں میں سے 50فیصد ٹیکس ریٹرن فائل کرتی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں